Post With Image

جاننا چاہتا ہوں اور کتنے سال عدالت آتے رہیں گے؟، نواز شریف


اسلام آباد: نواز شریف کی میڈیا سے گفتگواحتساب عدالت کے باہر نواز شریف نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا جاننا چاہتا ہوں اور کتنے سال عدالت آتے رہیں گے؟ ریفرنس میں کوئی سچائی ہوتی تو کیا ضمنی ریفرنس کی ضرورت ہوتی؟۔ انہوں نے کہا کل کا الیکشن جھوٹے مقدمات کا جواب ہے ، یہ جو سب کچھ ہو رہا ہے عوام اس کا جواب دے رہے ہیں، عوام کو سلام جو تندہی سے میرا مقدمہ لڑ رہے ہیں۔سابق وزیرا عظم کا کہنا تھا جب الزام ہی نہیں تو سزا کیوں ہوگی؟ احتساب کے نام پر انتقام لیا جا رہا ہے، جنہوں نے ریفرنس بنا کر بھیجے وہ چاہتے ہیں نواز شریف کوسزا ہو۔شریف خاندان کے خلاف نیب ریفرنسز کی سماعت بغیر کارروائی ملتوی ہونے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ ووٹ کے تقدس کی مثالیں دیکھ رہے ہیں اور کل لودھراں میں اس کا عملی مظاہرہ بھی دیکھا۔ایک سوال پر سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مجھے معلوم نہیں کہ انتقام کیوں لیا جا رہا ہے تاہم ڈرتا نہیں ہوں کیونکہ جو انتقام لے رہے ہیں وہ ان سے بھی پوچھ گچھ کریں جنہوں نے دو مرتبہ آئین توڑا اور ججز کو گرفتار کیا۔نواز شریف نے کہا کہ آج سب سے بڑے مجرم ہم بنے ہوئے ہیں اور وہ جنہوں نے دو، دو مرتبہ آئین توڑا انہیں نہیں پکڑا اور کیا ان تک پہنچتے ہوئے پر جلتے ہیں۔دریں اثنائ سابق وزیراعظم نوازشریف کے زیرصدارت پنجاب ہاﺅس اسلام آباد میں غیر مشاورتی اجلاس ہوا جس میںمریم نواز، طلال چودھری، طارق فضل چودھری، امیر مقام ،پرویز رشید،مریم اورنگزیب، طارق فاطمی، مصدق ملک ، آصف کرمانی، بلیغ الرحمن اور دیگر رہنما شریک ہوئے۔اجلاس میں ملک کی سیاسی صورتحال اورسینیٹ الیکشن پرگفتگوہوئی اس کے علاوہ لودھراں ضمنی انتخاب اور رابطہ عوام مہم پرتبادلہ خیال کیا گیا ، اجلاس میں نوازشریف کی لندن روانگی کے مجوزہ پروگرام پربھی بات چیت ہوئی،لیگی رہنماؤں نے لودھراں الیکشن میں کامیابی پرنوازشریف کومبارکباددی۔سابق وزیراعظم نوازشریف نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اللہ کا شکرگزار ہوں کہ اس نے عوام کی عدالت میں سرخرو کیا،ان کا کہناتھا کہعوامی عدالت نے فیصلہ کر دیا کون اہل ہے اور کون نااہل،میرے خلاف فیصلے دینے والے عوامی عدالت کے فیصلے دیکھ لیں۔نوازشریف نے کہا کہ عوام اب خود انصاف کر رہے ہیں ،سب سازشوں کا جواب عوامی عدالت سے آ رہا ہے،انہوں نے کہا کہ نوازشوں کے باوجود عوام نے لاڈلے کو شکست سے دوچار کیا۔انہوں نے کہا کہ لیگی رہنما اور کارکن انتخابات کی بھرپور تیاری کریں۔


آپ کی رائے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا