پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس میں اکتوبر سے روزانہ کی بنیاد پر سماعت

پاکستان کے سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس میں جسٹس وقار احمد سیٹھ کو خصوصی عدالت کا نیا سربراہ مقرر کر دیا گیا۔ عدالت نے 24 اکتوبر 2019 سے کیس کی روزانہ کی بنیاد پر سماعت کا فیصلہ کر لیا ہے۔ منگل کو وفاقی حکومت نے جسٹس (ر) طاہرہ صفدر کی ریٹائرمنٹ پر پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس وقار احمد سیٹھ کو خصوصی عدالت کا نیا سربراہ مقرر کیا ہے۔ 3 رکنی عدالت میں کیس کی سماعت کےآغاز پر پرویز مشرف کے وکیل کی جانب سے التواء کی درخواست دائر کر دی گئی۔ درخواست کے مطابق رضا بشیر ایڈووکیٹ ڈینگی کا شکار ہونے پر میو اسپتال لاہور میں زیرِعلاج ہیں لہذا سماعت ملتوی کی جائے۔ عدالت نےاستدعا منظور کرتے ہوئے سماعت 24 اکتوبر 2019 تک ملتوی کر دی۔ عدالت نے 24 اکتوبر 2019 سے کیس کی روزانہ کی بنیاد پر سماعت کا فیصلہ کرتے ہوئے فریقین کو آئندہ سماعت سے پہلے تحریری دلائل جمع کروانے کا حکم دے دیا ہے۔ خصوصی عدالت ہفتے کے روز بھی سماعت کرے گی۔