نہیں چاہتے افغانستان ہشتگردی کا گڑھ بن جائے‘ انتونیو گوتریس

نیویارک:(لیڈر نیوز)یواین سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے کہا ہے کہ افغانستان میں معاشی بحران لاکھوں لوگوں کو متاثر کر سکتا ہے ، نہیں چاہتے کہ افغانستان دہشت گردی کا گڑھ بن جائے۔اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے ایک انٹرویو میں کہا کہ طالبان کے ساتھ مذاکرات جاری رہنا چاہئیں ، اور عالمی برادری افغانوں کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کر سکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ انسانی حقوق اور خواتین کے حقوق کا احترام چاہتے ہیں ، تاکہ خواتین ان حقوق سے محروم نہ ہوں جو انہوں نے پہلے حاصل کیے تھے ، اور یہ کہ طالبان کو منشیات کے خلاف جنگ میں تعاون کرنا ہوگا۔دوسری جانب امریکہ نے کہا ہے کہ وہ وہ نئی افغان حکومت کے ساتھ تعلقات کے معاملے پر غور کر رہاہے اور طالبان کے وعدوں کو پورا ہوتے دیکھنا چاہتاہے،ترجمان امریکی محکمہ خارجہ نیڈ پرائس نے کابل سے بین الاقوامی پروازوں کی بحالی کا خیرمقدم کیا۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی برادری طالبان حکام کے مزید ایسے اقدامات سے خوش ہوگی۔ طالبان نے پرامن انخلا کے لیے اپنی ذمہ داری پوری کی۔

#UN Secretary General Antonio Guterres #does not want Afghanistan to become a hotbed of terrorism #leadernews #economic crisis in Afghanistan could affect millions of people