بجلی کی قیمت میں 4.33روپے فی یونٹ اضافے پر فیصلہ محفوظ

لاہور: (دنیا نیوز)مہنگائی کے ہاتھوں پسی عوام کو بجلی کے زوردارجھٹکے دینے کی تیاریاں‘ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی نام پر بجلی کی قیمت میں 4.33روپے فی یونٹ اضافے پر فیصلہ محفوظ کرلیاگیا۔بتایا گیا ہے کہ نیپرا سابقہ ایڈجسٹمنٹ اور شماریات کا تفصیلی جائزہ لینے کے بعد فیصلہ جاری کرے گا۔ مذکورہ اضافے سے صارفین پر 30 ارب روپے سے زائد کا اضافی بوجھ پڑے گا۔ 50 یونٹ اور کے الیکٹرک کے صارفین پر لاگو نہیں ہوگا۔سماعت کے دوران نیپرا حکام نے بتایا کہ ایندھن کی عالمی قیمتوں میں اضافے سے 26 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑا جب کہ میرٹ آرڈر کی خلاف ورزی پر 62.3 ملین روپے سے زائد کا بوجھ پڑا۔ کول پاور پلانٹس کی بندش پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے چیئرمین نیپرا نے تمام پاور پلانٹس کی بندش کا شیڈول نیپرا سے شیئر کرنے کی ہدایت کی۔سماعت کے دوران سی پی پی اے حکام نے کہا کہ وہ میرٹ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے فرنس آئل سے مہنگی بجلی پیدا نہیں کر سکتے۔انہوں نے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ "ہم ریفائنریز چلانے کے لیے مہنگی بجلی پیدا نہیں کر سکتے۔ یہ ممکن نہیں کہ ہم ریفائنریز کو چلانے کے لیے متبادل ذرائع سے بجلی پیدا نہ کریں۔

#Pakistan #decision of the government to increase the price of electricity